گوادر کی سیکیورٹی جلد پولیس کے سپرد کردی جائے گی، کور کمانڈر آصف غفور

0 21

بلوچستان کے ٹاپ ملٹری کمانڈر نے کہا ہے کہ آئندہ 3 سے 4 ماہ کے میں گوادر کی سیکیورٹی مکمل طور پر پولیس اور لیویز فورس کے سپرد کردی جائے گی اور مسلح افواج اپنے اسٹیشنز تک محدود رہیں گی اور شہر میں نظر نہیں آئیں گی۔

رپورٹ کے مطابق جمعرات گوادر میں ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے پاک فوج کی بارہویں کور کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل آصف غفور نے کہا کہ آرمی چیف بھی جلد بندرگاہی شہر کا دورہ کریں گے۔

اس موقع پر کور کمانڈر کوئٹہ نے گوادر کرکٹ اسٹیڈیم میں سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں، صحافیوں، تاجروں اور شہریوں سے ملاقات کی اور سیکیورٹی فورسز کے اعلیٰ حکام کے ساتھ میٹنگ کیں۔

اپنے خطاب میں لیفٹیننٹ جنرل غفور نے گوادر کے کونسلرز کو شہر کے ’حقیقی حکمران‘ قرار دیا جب کہ اس موقع پر گوادر کے 41 کونسلرز میں سے صرف ایک یا دو تقریب میں موجود تھے، اس صورتحال پر کور کمانڈر نے افسوس کا اظہار کیا۔

انہوں نے گوادر میں جماعت اسلامی کے امیر مولانا لیاقت کو ذمہ داری سونپی کی کہ وہ جمعہ کی صبح شہر کی میونسپل کمیٹی کے تمام کونسلرز سے ملاقات کر کے تبادلہ خیال کریں کہ شہر کے مسائل سے کیسے نمٹا جاسکے۔

اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ گوادر ہمارا گھر ہے اور اسے نقصان نہیں پہنچانا چاہیے انہوں نے کہا کہ کسی کو سڑکیں بلاک کرنے، شہر میں سرکاری مشینری اور ترقیاتی کاموں کو مفلوج کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ دھرنوں اور احتجاج سے نہیں بلکہ مل جل کر ساتھ کام کرنے سے ہی مسائل حل ہوسکتے ہیں۔

لیفٹیننٹ جنرل آصف غفور نے کہا کہ گوادر کے مسائل کے حل کے لیے مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی نمائندگی کرنے والی کمیٹی بنائی جائے۔

انہوں نے کہا کہ کمیٹی میں شامل ناموں کی فہرست جمعہ تک ڈپٹی کمشنر کو فراہم کی جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم سب سول انتظامیہ اور عوام کے ساتھ مشترکہ کوششوں کے ذریعے شہر کو درپیش مسائل کو حل کرنے کی کوشش کریں گے۔

اپنی رائے دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.