ضلع جہلم میں آج تک وفاقی محتسب اور ڈی جی اینٹی کرپشن کی کھلی کچہری کا انعقاد نہ ہو سکا

جہلم: ضلع بھر میں آج تک وفاقی محتسب ، ڈی جی اینٹی کرپشن نے کھلی کچہری کا انعقاد کرنے کی ضرورت ہی محسوس نہیں کی جس کیوجہ سے اداروں میں کرپشن عروج پر ہے۔ وفاقی محتسب اور ڈی جی اینٹی کرپشن کو اضلاع اور تحصیلوں کی سطح پر کھلی کچہریوں کے انعقاد کا پابند بنایا جائے تاکہ اداروں سے کرپشن اور کرپٹ افسران و اہلکاروں کا خاتمہ ہو سکے ۔ شہری

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر سمیت ضلع بھر میں پچھلی کئی دہائیوں سے وفاقی محتسب اور ڈی جی اینٹی کرپشن نے کھلی کچہری کے انعقاد کی ضرورت محسوس نہیں کی ، جس کیوجہ سے وفاقی اور صوبائی محکموں میں کرپشن کا جراثیم پوری طرح پھیل چکا ہے۔

کھلی کچہریوں کے انعقاد سے صوبائی و وفاقی محکموں سے متعلق سائلین کی شکایات سے بہتری ممکن ہے لیکن نامعلوم وجوہات کی بناء پر ضلع جہلم کے شہریوں کی داد رسی کے لئے آج تک وفاقی محتسب اور ڈی جی اینٹی کرپشن کی طرف سے کھلی کچہریوں کا انعقاد نہیں کیا گیا، جس کیوجہ سے سرکاری اداروں میں اختیارات سے تجاوز ، سائلین سے رشوت وصولی ، عوامی شکایات کے انبار ہیں۔

متعلقہ محکموں کے افسران ماتحت عملے کے خلاف کارروائیاں کرنے کی بجائے سائلین کو اپنے دفاتر کے اتنے چکر لگواتے ہیں کہ درخواست دینے والا سائل خود صلح کرنے کو ترجیح دیتا ہے ۔ محکمہ اینٹی کرپشن سرکاری محکموں کے افسران و اہلکاروں کے خلاف کارروائیاں کرنے سے گریزاں ہے ، جس کیوجہ سے رشوت ستانی پورے عروج پر ہے۔

شہریوں نے وزیراعظم پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ اضلاع اور تحصیلوں میں وفاقی محتسب اور ڈی جی اینٹی کرپشن کو کھلی کچہریوں کے انعقاد کا پابند بنایا جائے تاکہ سرکاری اداروں میں ہونے والی مالی و انتظامی بدعنوانی کا خاتمہ ممکن ہو سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button