ہوٹل مالکان کی من مانیاں، پراٹھا 40 روپے کا فروخت ہونے لگا

جہلم: ہو ٹل مالکان کی من مر ضی ،متعدد ہو ٹلوں میں فروخت ہو نے والی اشیاء سونے کا باؤ بکنے لگی، پراٹھا 40 رو پے کا فروخت ہو نے لگا ،بیشتر اشیاء کے دوگنے ریٹ مقرر ،چیک اینڈ بیلنس کا کو ئی نظام سرے سے مو جود نہیں ،متعلقہ ادارے اپنے فرائض سے غفلت بر تنے لگے۔

تفصیلا ت کے مطابق جہلم میں ہو ٹل ما لکان نے من ما نے ریٹ مقرر کر رکھے ہیں چیک اینڈ بیلنس کا کو ئی سسٹم مو جود نہیں جس کی وجہ سے ہو ٹل ما لکان کو کھلی چھو ٹ ملی ہو ئی ہے وہ گا ہکوں کو دو نوں ہا تھوں سے لو ٹنے میں مصروف ہیں ۔

وہ روٹی جسے تھوڑا سا گھی لگا ؤ توپرا ٹھا بن جا تی ہے 40روپے میں فروخت ہو نے لگی جو عوام کے سا تھ سرا سر نا انصافی ہے اور ذمہ داران کی غفلت اور لا پر واہی کا منہ بو لتا ثبوت ہے ۔

عوامی و سما جی حلقوں نے ڈی سی او جہلم سے ہو ٹلوں میں مقرر کئے جا نے والے ریٹس کی با قاعدہ چیکنگ کا مطالبہ کیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button