رکشہ ڈرائیوروں نے جہلم شہر کے اندر درجنوں ڈی کلاس اور سی کلاس رکشہ اسٹینڈ قائم کر لئے

جہلم: سیکرٹری ڈسٹرکٹ روڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی کی عدم دلچسپی ، رکشہ ڈرائیوروں نے شہر کے اندر درجنوں ڈی کلاس اور سی کلاس رکشہ اسٹینڈ قائم کر لئے، شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا، قانون نافذ کرنے والے ادارے فوٹو سیشن تک محدود، شہریوں نے ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق سیکرٹری ڈسٹرکٹ روڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی، ٹریفک پولیس سمیت متعلقہ ذمہ داران کی غفلت و لاپرواہی کیوجہ سے اندرون شہر میں رکشہ ڈرائیوروں نے درجنوں سے زائد رکشہ اسٹینڈ قائم کرکے شہریوں کی مشکلات میں اضافہ کررکھاہے۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ اسٹینڈ قائم کرنے سے قبل باضابطہ منظوری حاصل کرنا ہوتی ہے اور مسافروں کی سہولت کے لئے تمام تر انتظامات مکمل کرنے ہوتے ہیں، لیکن سیکرٹری ڈسٹرکٹ روڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی کی عدم توجہی کیوجہ سے اندرون شہر ہر چوک چوراہے میں رکشہ ڈرائیوروں نے رکشہ اسٹینڈ قائم کرکے رکشے کھڑے کر رکھے ہیں جس کیوجہ سے چھوٹی گاڑیوں اور موٹر سائیکل سواروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ ماہانہ لاکھوں روپے سرکاری خزانے سے تنخواہوں کی مد میں وصول کرنے والے افسران و اہلکار قانون پر عملدرآمد کروانے کی بجائے سب اچھا ہے کا راگ آلا پ رہے ہیں۔

شہریوں نے چیئرمین ڈسٹرکٹ روڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی، ڈپٹی کمشنر سے مطالبہ کیا ہے کہ سیکرٹری ڈسٹرکٹ روڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی سمیت ٹریفک پولیس کو پابند بنایا جائے کہ اندرون شہر گلی کوچوں میں قائم ہونے والے رکشہ اسٹینڈ ختم کروائے جائیں تاکہ شہریوں کو پیش آنے والی مشکلات کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button