للِہ تا جہلم دو رویہ سڑک منصوبے کیلئے صرف 50 کروڑ روپے جاری کرنا زیادتی ہے۔ راجہ افتخار احمد شہزاد

پنڈدادنخان: للِہ تا جہلم ڈوول کیرج وے کا منصوبہ تحصیل پنڈدادنخان کے لیے بہت اہمیت کا حامل ہے، اتنے بڑے منصوبے کے لیے صرف 50 کروڑ روپے جاری کرنا تحصیل پنڈدادنخان کی عوام سے زیادتی ہے۔ موجودہ حکومت نے پچھلی حکومت سے زیادہ تحصیل پنڈدادنخان کے باسیوں کے ساتھ مذاق کیا ہے موجودہ حکومت دو رویہ سڑک کے مزید فنڈز ریلیز کرے۔

ان خیالات کا اظہار سابق تحصیل ناظم راجہ افتخار احمد شہزاد نے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اگر پچھلی حکومت نے سست روی کا مظاہرہ نہ کیا ہوتا اور منصوبہ کی رقم کا آدھا حصہ جاری کروایا ہوتا تو آج کام سست روی کا شکار نہ ہوتا، موجودہ حکومت سے اپیل ہے کہ جلد از جلد فنڈز کے معاملات کو فوری حل کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ میں نے پی ٹی آئی کو علاقہ کی فلاح و بہبود کی خاطر خیرآباد کہا کیونکہ پچھلی حکومت تحصیل پنڈدادنخان کی عوام کو وہ سہولیات نہ دے سکی جو دینی چاہیے تھی، پانی کا مسئلہ،سوئی گیس کا مسئلہ،ڈنڈوٹ سیمنٹ فیکٹری کا مسئلہ اور دیگر مسائل جوں کے توں ہیں۔

راجہ افتخار احمد شہزاد نے کہا کہ للِہ تا جہلم ڈوول کیرج وے کے تمام فنڈز کو جلد از جلد ریلیز کروایا جائے اور موجودہ حکومت فنڈز کے معاملات میں اپنا کلیدی کردار ادا کریں تا کہ عوام کی مشکلات کا ازالہ ہو ،سکے اس وقت تحصیل پنڈدادنخان کی عوام دو رویہ سڑک نا مکمل ہونے کی وجہ سے شدید ذہنی اذیت کا شکار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اگر کسی مریض کو ایمرجنسی میں لاہور، راولپنڈی، سرگودھا لے جانا پڑے تو مریض سڑک خراب ہونے کی وجہ سے راستے میں ہی دم توڑ جاتا ہے، موٹرسائیکل سواروں کو بھی شدید اذیت اٹھانا پڑتی ہے۔

راجہ افتخار احمد شہزاد نے مزید کہا کہ ڈنڈوٹ فیکٹری کے مزدور فیکٹری بند ہونے کی وجہ سے آج فاقہ کشی کی زندگی گزار رہے ہیں، تحصیل پنڈدادنخان میں آج پانی کا مسئلہ جوں کا توں ہے، نڑومی ڈھن منصوبہ آج بھی نامکمل ہے، اگر للِہ تا جہلم ڈوول کیرج وے کا منصوبہ مقررہ وقت پر پورا نہ کیا گیا تو مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی دونوں کو سیاسی نقصان اٹھانا ہو گا اور عوام اپنا غصہ الیکشن میں دیکھائے گی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button