قومی ورثہ قلعہ نندنا باغانوالہ کی تزئین و آرائش میں ٹھیکیدار نے کرپشن کے نئے ریکارڈ قائم کر دئیے

پنڈدادنخان: تحصیل پنڈدادنخان میں قائم قومی ورثہ قلعہ نندنا باغانوالہ کی تزئین و آرائش میں ٹھیکیدار نے کرپشن کے نئے ریکارڈ قائم کر دئیے ، محکمہ بلڈنگ خاموش تماشائی، علاقہ مکین سراپااحتجاج ہیں۔

تفصیلات کے مطابق قومی تاریخی ورثہ قلعہ نندنا باغانوالہ کی تزئین و آرائش کے لئے محکمہ بلڈنگ اور ٹھیکیدار کی ملی بھگت سے انتہائی ناقص قسم کا میٹریل استعما ل کیا جا رہا ہے۔

قلعہ نندنہ باغانوالہ انتہائی اہمیت کا حامل ہے ، آج سے1 ہزار سال قبل محمود غزنوی کے ہمراہ مشہور سائنسدان ابوریحان البیرونی آئے قلعہ نندنا باغانوالہ میں محمود غزنوی نے مشہور سائنسدان ابو ریحان البیرونی کو لیبارٹری تعمیر کروا کے دی اور البیرونی نے زمین کا قطر معلوم کیا تھا ان کی نشاندہی کے مطابق پوری دنیاء کا سنٹر پنڈدادنخان قلعہ نندنا باغانوالہ ہے اور آج جدید سائنس کے مطابق بھی پوری دنیاء کا سنٹر قلعہ نندنا باغانوالہ پنڈدادنخان ہی ہے۔

آج سے ڈیڑھ سال قبل سابق وزیراعظم نے قلعہ نندنا باغانوالہ کی اہمیت کو مد نظر رکھتے ہوئے قلعہ نندنہ کا دورہ کیا اور قومی ورثے کو محفوظ بنانے کی غرض سے قلعہ کی تزئین و آرائش کے لئے 17 کروڑ کی خطیر رقم منظور کی ،ستم ظریقی کی انتہا تو یہ ہے کہ محکمہ بلڈنگ کے افسران کی سرپرستی میں ٹھیکیدار جو تعمیراتی کام کروا رہا ہے اس میں انتہائی ناقص اور غیر معیاری میٹریل کا بے دریغ استعمال کیا جا رہاہے، جو مکمل ہونے سے قبل ہی ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو چکاہے۔

علاقہ مکینوں نے ڈی جی اینٹی کرپشن سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ قومی خزانے کو لوٹنے والے بلڈنگ ڈیپارٹمنٹ کے افسران اور ٹھیکیدار کے خلاف انکوائری کروائی جائے، مالی و انتظامی بدعنوانی کے مرتکب افسران و ٹھیکیدار کے خلاف فوجداری مقدمات درج کروائے جائیں تاکہ آئندہ کوئی شخص قومی خزانے کو نقصان نہ پہنچا سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button