پاکستان کسی قسم کے انتشار کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ عرفان الحق

جہلم پریس کلب کے سابق صدر، برطانیہ پریس کلب کے جائنٹ سیکرٹری عرفان الحق نے کہا ہے کہ پاکستان کسی قسم کے انتشار کا متحمل نہیں ہو سکتا ، سیاسی اختلاف کو سیاست تک رکھا جائے ذاتیات کی سیاست ملک و قوم کے لئے خسارے کا سبب بن سکتی ہے۔

ان خیالات کا اظہار عرفان الحق نے جہلم پریس کلب میں ٹیلیفونک گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ جیت اورہار سیاسی عمل کا حصہ ہے مگر اخلاقیات کا دامن ہاتھ سے نہیں چھوڑنا چاہئے ، سیاسی معاملات پر دست و گریباں نہیں ہونا چاہیے ، عام انتخابات میں دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہوجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر لوگوں کی پگڑیاں اچھال کر ملک کی بدنامی کے سوا کچھ حاصل نہیں ہو گا، امید کرتے ہیں کہ نئی حکومت ضروری اصلاحات کر کے الیکشن کی جانب گامزن ہو جائے گی۔

انہوںنے کہا کہ ساری سیاسی جماعتیں پاکستان کی ہیں ملک کو سب نے ملکر ترقی کی راہ پرگامزن کرنا ہے، انتشار کی سیاست کو فوری بند کیا جائے ،قوم پہلے ہی شدید اضطربی کیفیت میں مبتلا ہے ،قوم کو تقسیم کرنے کی بجائے یکجا کیا جائے یہی ملک کے مفاد میں ہے۔

عرفان الحق نے کہا کہ افسوس سے کہنا پڑ رہا ہے کہ ہم نے ماضی سے کچھ نہیں سیکھا مملکتِ خداداد پاکستان اللہ کی عظیم نعمت ہے ،آئین و قانون کی حکمرانی میںہی ملک و قوم کی بقاء ہے پسند و ناپسند سے نکل کر پاکستان کے لئے متحد ہو کر کام کرنا ہوگا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button