ہائی کورٹ کا گرفتار پی ٹی آئی کارکنوں کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم، ڈپٹی کمشنر اور ڈی پی او جہلم طلب

جہلم میں تحریک انصاف کے ورکرز کی غیر قانونی گرفتاری کے خلاف لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ کا بڑا فیصلہ آگیا۔

عدالت نے پولیس کو آرڈر کیا گیا کہ تمام گرفتار کارکنوں کو کل عدالت میں پیش کرے اور ڈپٹی کمشنر اور ڈی پی او جہلم کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا حکم دے دیا۔

پاکستان تحریک انصاف جہلم کےضلعی جنرل سیکرٹری فراز چوہدری نے تحریک انصاف کے کارکنوں کی غیر قانونی گرفتاریوں پر عدالت رجوع کیا تھا۔مرزا آصف ایڈووکیٹ کی آئی ایل ایف کے دیگر ممبران کی فراز چوہدری نے معاونت کی۔

اس حوالے سے تحریک انصاف ضلع جہلم کے جنرل سیکرٹری فراز چوہدری کا کہنا تھا کہ ہمارے کارکنوں کے حوصلے گرفتاریوں سے پست نہیں ہوئے۔ پولیس نے جس طرح ہمارے کارکنوں کے ساتھ ہتک آمیز رویہ آختیار کرتے ہوئے چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کیا ہے ہم انکو قانون کے کٹہرے میں کھڑا کریں گے اور حکومت اوچھے ہتھکنڈوں پر آتر آئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم انشااللہ حقیقی ازادی لے کر رہیں گے چاہے ہماری جان چلی جائے ہمارے کارکنوں کے حوصلے ان بزدلانہ کارائیوں سے پست نہیں ہوں گئے اور حکومت کے دن نہیں اب گھنٹے گنے جاچکے ہیں شہباز شریف کی حکومت کے دن گنے جا چکے ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button