ضلع کی فلاح و ترقی کیلئے صحافی برادری کو ساتھ چلنا ہوگا۔ ڈپٹی کمشنر جہلم کامران خان

جہلم: ڈپٹی کمشنرکامران خان نے کہا ہے کہ صحافی کسی بھی معاشرے میں آنکھ اور کان کا کام کرتے ہیں،میڈیا ملک کا چوتھا ستون ہے، ضلع کی فلاح و ترقی کیلئے صحافی برادری کو ساتھ چلنا ہوگا۔

یہ بات انہوں نے جہلم پریس کلب کے ممبران کے ساتھ ایک تعارفی ملاقات میں کی۔ پریس کلب کی قیادت صدر جہلم پریس کلب محمد شہباز بٹ کر رہے تھے۔ ڈپٹی کمشنر کامران خان نے کہا کہ مثبت تنقید سے اصلاح ہوتی ہے، صحافی ضلع کے مسائل کی نشاندہی کریں، ان کو قانون اور وسائل کے مطابق حل کیا جائے گا۔

ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ضلع جہلم ایک خوبصورت اور ماڈل ضلع ہے۔ ضلعی انتظامیہ حکومت کی ہدایت اور پالیسی کے مطابق کام کررہی ہے، مہنگائی کے خاتمے کیلئے پرائس کنٹرول مجسٹریٹس متحرک ہیں، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کی تعدا میں اضافہ بھی کیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اشیاء ضروریہ کے نرخوں پر خصوصی توجہ مرکوز کی ہوئی ہے ۔ گراں فروشی کی کسی صورت اجازت نہیں دی جائے گی ۔ رواں ہفتے بھی پرائس کنٹرول مجسٹریٹس نے دکانداروں کو بھاری جرمانے کئے ہیں۔ سبسڈی والے آٹے کی فراہمی کیلئے پوائنٹس بنائے گئے ہیں، شہر کی صفائی اور سیوریج کے نظام کو بہتر بنانے کے لئے عملی اقدامات کئے جارہے ہیں۔ تجاوزات کے خاتمے کیلئے ضلع بھر میں جلد آپریشن کیے جائیں گے۔

اس موقع پر صدر جہلم پریس کلب محمد شہباز بٹ سمیت دیگر صحافیوں نے مختلف مسائل کی نشاندہی کی جن میں شہر کی ٹوٹی پھوٹی سڑکیں، کچرا کنڈی کے ڈھیر، سول ہسپتال میں مریضوں کو پیش آنے والی مشکلات، اندرون شہر میں بچوں کے لئے پارک، غیر قانونی رکشہ اسٹینڈ، غیر قانونی کریش پلانٹس ، اندرون شہر میں بھاری گاڑیوں کا داخلہ، دریاجہلم کے کنارے غیر قانونی تعمیرات، گرین بیلٹ کا قیام جیسے مسائل شامل تھے۔

ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ تمام مسائل کو نوٹ کرلیا گیا ہے اپنے وسائل اور اختیارات کو مد نظر رکھتے ہوئے درج بالا مسائل کو مرحلہ وار حل کیا جائے گا اور آئندہ ملاقات میں بہت سے مسائل حل ہوچکے ہوں گے۔

ملاقات میں صدر جہلم پریس کلب محمد شہباز بٹ، جنرل سیکرٹری سید مستفیض اقبال بخاری، سینئر نائب صدر وسیم قریشی، نائب صدر ملک انجم یوسف، فنانس سیکرٹری شیخ ذوالفقار علی کاشف، سیکرٹری اطلاعات سید ناصر محمود شاہ سمیت ممبران کی کثیر تعداد موجود تھی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button