عید الفطر کی آمد میں محض چند باقی؛ جہلم سمیت ملحقہ علاقوں کے بازاروں میں خریداروں کا رش بڑھنے لگا

جہلم: عید الفطر کی آمد میں محض 3 سے 4 روز باقی رہ گئے شہر سمیت ملحقہ علاقوں کے بازاروں میں خریداروں کارش بڑھنے لگا، شہری گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں پر خریداری کے لئے شہر کا رخ کرنے لگے ، لیکن بازار اور بڑی سڑکیں ٹریفک کے بہاؤ کو کنٹرول نہ کئے جانے کے باعث ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا،افطاری کے وقت ٹریفک جام رہنے سے شہریوں کی افطاری بھی سڑکوں پر ہونے لگی ، تجاوزات بھی ٹریفک جام کرنے میں کردار ادا کرنے لگے۔

تفصیلات کے مطابق رمضان المبارک کے اختتام میں محض 3 سے 4 روز باقی رہ گئے ہیں ،عید کی خریداری کیلئے شہر کے بازاروں میں رش بڑھنے لگا ہے،ٹریفک پولیس کی جانب سے تاحال کسی قسم کا کوئی پلان جاری نہیں ہو سکا ، جس کیوجہ سے اندرون شہر کی سڑکوں پر ٹریفک کا جام رہنا معمول بن چکا ہے ۔

میونسپل کمیٹی کے شعبہ انسداد تجاوازت کی غفلت لاپرواہی اور مبینہ طور پر ملی بھگت سے، مین بازار، نیا بازار، کناری بازار،دلہن بازار،راجہ بازار،چوک گنبدوالی مسجد، سمیت سول لائن روڈ، ریلوے روڈ،تحصیل روڈ، مشین محلہ روڈ،چوک چوراہوں جن میںمحمدی چوک ،قبرستان چوک، شاندار چوک،جادہ چوک ، چوگ گنبدوالی مسجدو دیگر مصروف بازاروں میں تجاوزات کی بھرمار نے شہریوں کے لئے مشکلات کھڑی کررکھی ہیں ،ان تجاوزات کیوجہ سے ٹریفک کے بہاؤ میں غیر معمولی خلل واقع ہو رہاہے جس کیوجہ سے طویل دورانیے تک ٹریفک کا جام رہنا روز کا معمول بن چکا ہے۔

شہریوں نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ ٹریفک کی روانی کو جاری رکھنے کے لئے متعلقہ محکمے ذمہ داریاں ادا کریں تاکہ شہریوں کو پیش آنے والی مشکلات کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button