دریائے جہلم میں تین معصوم بچوں کے ڈوبنے کے بعد نہانے پر مکمل پابندی عائد

جہلم: دریائے جہلم میں تین معصوم بچوں کے ڈوبنے کے بعد محکمہ داخلہ پنجاب نے دریائے جہلم میں نہانے پر مکمل پابندی عائد کر دی۔

تفصیلات کے مطابق تین کم سن بچوں کے ڈوبنے کے واقعے کے بعد ڈپٹی کمشنر جہلم کامران خان کی سفارش پر محکمہ داخلہ پنجاب نے دریائے جہلم میں نہانے پر دفعہ 144 کے تحت پابندی عائد کر دی ہے جو فوری طور پر نافذ العمل ہے، خلاف ورزی پر قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے دفعہ 144 نافذ کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ جہلم کی ساحل کالونی کے قریب واقع دریائے جہلم میں تین بچے ڈوب کر جاں بحق ہو گئے، ڈوبنے والوں میں دس سالہ رضوانہ، سات سالہ عثمان اور چھ سالہ نتاشا شامل ہیں۔

علاقہ مکینوں نے اپنی مدد آپ کے تحت ایک بچی کی لاش نکال لی ہے تاہم دو بچوں کی لاشوں کی تلاش کے لیے ریسکیو عملے نے آپریشن شروع کر دیا، ریسکیو آپریشن میں آرمی غوطہ خور بھی حصہ لے رہے ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button