جان لیوا گولیوں کی فروخت، 62 سالہ شخص جاں بحق ، زرعی ادویات کی دکانوں پر سرچ آپریشن

سوہاوہ: زہریلی گولیوں کی فروخت پر نوٹس، جان لیوا گولیوں کی فروخت پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر پلانٹ پروٹیکشن کا جہلم کی تحصیل سوہاوہ کے مختلف علاقوں میں اچانک چھاپے ،زرعی ادویات کی دکانوں پر سرچ آپریشن کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز میڈیاپر شائع ہونے ہونے والی خبروں پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر پلانٹ پروٹیکشن نے سوہاوہ کے مختلف علاقوں میں قائم زرعی ادویات فروخت کرنے والی دکانوں پر سرچ آپریشن کیا جہاں پر گندم میں رکھی جانے والی گولیوں کے بارے میں ریکارڈ چیک کیا گیا، تحقیق کے مطابق تمام دکانوں پر ریکارڈ کو بھی چیک کیا گیا اور کوئی ممنوعہ ادویات فروخت کرنے کا ثبوت نہ ملا۔

علاؤہ ازیں اسسٹنٹ ڈائریکٹر نے سوہاوہ کے گاؤں جندوٹ میں مبینہ طور پر گندم کی زہریلی گولیوں کے استعمال سے فوت ہونے والے شخص کے لواحقین سے بھی ملاقات کی ،لواحقین کے مطابق متوفی ضعیف العمر ارزم کا ذہنی توازن درست نہ تھا جس کی وجہ سے متوفی کی طبی موت واقع ہوئی ۔

یہاں یہ امر قابل زکر ہے کہ ضلع جہلم میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر پلانٹ پروٹیکشن کی سرپرستی میں بیشتر زرعی ادویات کے ایسے سٹور موجود ہیں جہاں بے شمار 2 نمبر ادویات فروخت کی جارہی ہیں جس سے کسانوں کو لاکھوں روپے کا نقصان برداشت کرنا پڑتا ہے ، اور ایسے سٹورز بھی موجود ہیں جن کے پاس کوئی سٹور چلانے کا لائسنس موجود نہیں،اسسٹنٹ ڈائریکٹر پلانٹ پروٹیکشن کی سرپرستی میں 2 نمبر ادویات کی فروخت کا کارروبار پورے عروج پر ہے۔

شہریوں نے چیف سیکرٹری پنجاب، سیکرٹری زراعت سے مطالبہ کیا ہے کہ جہلم اسسٹنٹ ڈائریکٹر پلانٹ پروٹیکشن کو تبدیل کرکے فرض شناس، ایماندار آفیسر کو تعینات کیا جائے تاکہ کسان بہتر پیداوار کے ذریعے خوشحالی کی جانب گامزن ہو سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button