رمضان کریم کا آخری عشرہ شروع لیکن جہلم شہر سمیت ضلع بھر میں مہنگائی کا طوفان نہ تھم سکا

جہلم: رمضان کریم کا آخری عشرہ شروع لیکن شہر سمیت ضلع بھر میں مہنگائی کا طوفان نہ تھم سکا، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس ٹھنڈے کمروں تک محدود ، انتظامیہ فوٹو سیشن کرواکے سب اچھا ہے کی رپورٹس بھجوانے میں مگن شہری سراپا احتجاج ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ماہ صیام کا آخری عشرہ گزرنے کو ہے، شہر سمیت ضلع بھر میں تاجروں نے جنگل کا قانون نافذ کرکے شہریوں کو ناقص و غیر معیاری اشیاء مہنگے داموں فروخت کرنی شروع کررکھی ہیں جبکہ سرکاری نرخ ناموں پر عملدرآمد کروانے والے پرائس کنٹرول مجسٹرٹیس ٹھنڈے کمروں میں براجمان ہیں ،جس کیوجہ سے غریب ، سفید پوش طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد گراں فروشوں کے رحم کرم پر ہیں۔

شہریوں نے اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سرکاری نرخ نامے مذاق بن کر رہ گئے ہیں ، بااثر دکانداروں نے لوٹ مار کے نئے طریقے ایجاد کررکھے ہیں روز مرہ کی اشیاء کو 1 سے 5 نمبر دیکر انتہائی ناقص و غیر معیاری اشیاء سرکاری نرخ ناموں پر فروخت کرنی شروع کررکھی ہے جبکہ معیاری اشیاء کی قیمتیں آسمانوں کو چھو رہی ہیں۔

شہریوں نے اربا ب اختیار سے مطالبہ کیاہے کہ لوٹ مار کا بازار گرم کرنے والے دکانداروں کے خلاف فوجداری مقدمات کا اندراج کروایا جائے تاکہ شہری حفظان صحت کے اصولوں کے عین مطابق اشیاء ضروریہ خرید کا استعمال کر سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button