سوہاوہ، ڈومیلی اور گردونواح میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری، عوام سراپا احتجاج

سوہاوہ، ڈومیلی اور اس کے گردونواح میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ نے عوام کی چیخیں نکلوا دیں، کئی کئی گھنٹوں کی لوڈشیڈنگ نے کاروباری زندگی کو مفلوج کر کے رکھ دیا اور جون کے ماہ شدید گرمی کی وجہ سے بہت سے لوگ ہیٹ سٹوک کی وجہ سے بے ہوش ہونا شروع ہو گئے ہیں۔

دوسری جانب مرمت کے نام پر صبح سات بجے سے لے کر دو بجے تک لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے، عوام سراپا احتجاج ہے کہ یہ کون سی مرمت کی جا رہی ہے جو سالوں گزر گئے لیکن مرمت مکمل نہیں ہو رہی، عوام نے حکومت سے درخواست کی ہے کہ پاکستان پر رحم کیا جائے پہلے ہی بہت مہنگائی ہے اور پورا دن بجلی بند ہونے کی وجہ سے کاروبار بالکل تباہ برباد ہو گئے ہیں، گھر کا نظام چلانا بہت مشکل ہو چکا ہے، عوام فاکہ کشی تک پہنچ چکی ہے، پورے پاکستان میں بجلی کا نظام بہت خراب ہو چکا ہے،بارہ بارہ گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ بہت ظلم ہے۔

تحصیل سوہاوہ جہلم کی ایسی تحصیل ہے جہاں پانی کا دیرینہ مسئلہ ہے وہ حل نہیں ہو سکا، دوسرا اس تحصیل کی عوام کو ہر حکومت بے وقوف بنا تی ہے، سوہاوہ میں گیس کے لئے تین دفعہ افتتاح ہو ئے ہیں لیکن کام شروع بالکل نہیں ہوا، سوہاوہ تحصیل ہونے کے باوجود بنیادی چیزوں سے مرحوم ہے، نہ پانی ہے، نہ بجلی ہے اور نہ گیس ہے۔

سوہاوہ کی عوام نے حکومت سے اپیل کی ہے جو ناانصافی کی جا رہی ہے وہ ختم کی جائے، تحصیل سوہاوہ پاکستان کی ہی تحصیل ہے، کسی بھی حکومت نے سوہاوہ کی بنیادی ضرورت کو پورا کرنے کے لیے کوئی اقدام نہیں اٹھائے گئے سوہاوہ کی عوام بہت مایوس ہو چکی ہے۔

عوام نے اعلی احکام سے اپیل کی ہے کہ اس تحصیل کے ساتھ جو ناانصافی کی جارہی ہے وہ ختم کی جائے اور جو بنیادی ضروریات ہیں وہ پوری کی جائیں اپنی سالانہ کارگردگی گلیاں اور نالیاں والی سنا کر عوام کو مطمئن نہ کریں جو انسان کو زندہ رہنے کے لیے چیزیں ضروری ہیں وہ پوری کی جائیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button