پروفیسر قتل کیس؛ بیوی اور آشنا قاتل نکلے، دینہ پولیس نے دونوں کو گرفتار کر لیا

دینہ کے قریب آشنا کے ساتھ مل کر اپنے خاوند کو بے دردی سے قتل کرنے والی ملزمہ عاشق سمیت گرفتار، ملزمہ نے خاوند کو قتل کر نے کے بعد نعش کو قریبی جنگل میں پھینک کر فرار ہو گئی تھی، پولیس نے ملزمان کو 24گھنٹے میں گرفتار کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز دینہ کے قریب جی ٹی روڈ ڈومیلی موڑ کے قریب گوجر خان کالج کے پنجابی کے پروفیسر رفاقت علی ولد محمد غضنفر علی ساکن تاجو جھنگی گوجرخان ضلع راولپنڈی کی تشدد زدہ لاش قریبی جنگل سے ملی جس پر پولیس تھانہ دینہ نے نعش کو قبضہ میں لے کر تفتیش شروع کر دی تھی۔

کامران ممتاز ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر جہلم کے احکامات پر ایس پی انویسٹی گیشن ڈاکٹر انعم فریال کی سربراہی میں ڈی ایس پی صدر سر کل خالد محمود ایس ایچ او تھانہ دینہ انسپکٹر محمد شریف اور دیگر افسران پر مشتمل ٹیم تشکیل دی گئی۔

ٹیم نے موقع سے تمام شوائد اکٹھے کر کے قتل میں ملوث مقتول کی بیوی بشریٰ ازرم ولد ازرم حسین اور اس کے آشنا ندیم احمد ولد مشتاق احمد ساکن موہڑہ ملکاں گوجر خان جدید سائنٹیفک طریقہ کار اور ہیومن انٹیلی جینس ریسورسز کو بروئے کار لاتے ہوئے 24گھنٹے کے قلیل وقت میں دونوں کو گرفتار کر لیا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button