محکمہ ماحولیات کی نااہلی، دھواں چھوڑتی گاڑیوں نے شہریوں کو اعصابی مریض بنا دیا

جہلم: محکمہ ماحولیات کی نااہلی دھواں چھوڑتی گاڑیوں نے شہریوں کو اعصابی مریض بنا دیا، محکمہ ماحولیات کے افسران نے مجرمانہ خاموشی اختیار کر لی، شہری سانس، دمہ، کی بیماریوں میں مبتلا ہونے لگے۔

تفصیلات کے مطابق ٹرانسپورٹرز اور محکمہ ماحولیات کی مک مکا پالیسی کے باعث اندرون شہر و دیگر علاقوں میں چلنے والی سڑکوں پر کھٹارہ گاڑیاں، شور پیدا کرنیوالے چنگ چی رکشوں، دھواں چھوڑتی گاڑیوں کی بھر مار نے شہریوں کو اعصابی امراض میں مبتلا کرنا شروع کررکھا ہے۔

شہر کے اہم چوک، چوراہوں اور ملحقہ علاقوں سمیت اندرونی سڑکوں پر دھواں چھوڑتی گاڑیاں، بے ہنگم شور پیدا کرنے والے چنگ چی رکشے، موٹر سائیکلیں، آٹو رکشے دندناتے پھرتے ہیں جن سے شہر کی آب و ہوا آلودہ ہونے کے ساتھ ساتھ شہری سانس ، دمہ اور عصابی بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ گاڑیوں کا زہریلا دھواں جگر پھیپھڑے اور سانس کی بیماریوں کے ساتھ ساتھ جلد کی بیماریوں کو بھی جنم دیتا ہے اس سے ٹی بی کا خطرہ بھی لاحق ہو سکتا ہے۔

شہر کی عوامی و سماجی، فلاحی، شہری، رفاعی تنظیموں کے عمائدین نے ڈپٹی کمشنر، ڈائریکٹر محکمہ ماحولیات سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button