نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس نے نو مور کے نام سے مہم کا آغاز کر دیا ہے۔ آئی جی خالد محمود

دینہ: نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس کے انسپکٹر جنرل خالد محمود کی ہدایت پر نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹر وے پولیس N-5 North-II، جہلم نے نو مور کے نام سے ایک نئی مہم شروع کر دی ہے جو مسافروں کے تحفظ اور قانون کے یکساں نفاذ کو یقینی بنانے کیلئے ہائی ویز اینڈ موٹر وے پولیس کی طرف سے کیے گئے اقدامات اور جدید آلات کے بارے میں عوام کو آگاہ کرے گی۔

اس جدید نظام کو بالخصوص اور منتخب موٹرویز پر شروع کیا جارہا ہے جو کہ خامیوں سے پاک جدید ٹیکنالوجی سے لیس ہے، ان نئے اقدامات سے زیرو ٹالرنس پالیسی کے نفاذ کومزید تقویت ملے گی،ان نئے اقدامات کے نفاذ کا مقصد پاکستان اور بین الاقوامی معیار کے تحت چلنے والے جد ید اور بہترین نظام کو بروئے کار لاتا ہے، موٹر ویز اور ہائی ویز پر تیز رفتاری سے گاڑی چلانے والوں پر بھاری جرمانے عائد کئے جائیں گے۔

مزید برآں متعدد بار قانون کی خلاف ورزی کر نیوالوں کواب ڈرونزاور سپوٹرزسے چیک کیا جائے گا اور تیز رفتاری کی مرتکب گاڑیوں کو ہر صورت تعاقب کر کے روکا جائے گا۔

اس حوالے سے آئی جی موٹر وے پولیس خالد محمود نے نتایا کہ نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس کی نو مور (NO MORE) کے نام سے مہم کا آغاز، نئے اقدمات سے زیرو ٹالرنس پالیسی کے نفاذ کومزید تقویت ملے گی، جدید ٹیکنالوجی کا استعمال حادثات اور قیمتی جانوں کے نقصان کو روک سکتا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ موٹروے پولیس مسافروں کی جان و مال کی محافظ ہے، گاڑیوں کی رجسٹریشن سمیت اہم دستاویزات کا ریکارڈ محفوظ کیا جارہاہے،متعدد بار قانون کی خلاف ورزی پراب لائسنس منسوخ کیا جائے گا ، جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے خلاف ورزی کر نیوالوں سے نمٹا جائیگا، جن میں Drones اور Spotters شامل ہیں، موٹر وے پر سفر کر نیوالا ہرشہری قابل احترام ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے خلاف ورزی کرنیوالوں سے نمٹا جائیگا، موٹر وے پولیس کا مشن انسانی جانوں کو حادثات سے بچانا ہے، موٹر وے پر تیز رفتاری اور ریس لگانا جان لیوا حادثے کا باعث بن سکتا ہے، تیز رفتاری کر نیوالے ڈرائیورز کو بھاری جرمانے ہوں گے، تیز رفتاری کی مرتکب گاڑیوں کو ہر صورت تعاقب کر کے روکا جائے گا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button