شہیدوں، غازیوں، اوورسیز پاکستانیوں کا صاف ستھرا اور کشادہ شہر تجاوزات اور قبضہ گروپوں کا مسکن بن گیا

جہلم: شہیدوں ، غازیوں، اوورسیز پاکستانیوں کا صاف ستھرا اور کشادہ شہر تجاوزات اور قبضہ گروپوں کا مسکن بن چکا ہے۔ بازاروں سمیت گلی کوچوں میں تجاوزات کی بھرمار، شہر جو اپنے حقیقی منفرد ڈیزائن اور نقشے کے اعتبار سے راولپنڈی ڈویژن کا خوبصورت ترین اور سڑکوں کے لحاظ سے کشادہ شہر گرداناجاتا تھا اب تجاوزات کی وجہ سے تنگ گلیوں میں تبدیل ہو کر رہ گیا ہے۔

تجاوزات کا کینسر بازاروں سے نکل کر شہر کے گلی محلوں تک پھیل چکاہے، مین بازار، نیا بازار، اقبال لائبریری روڈ، ریلوے روڈ، مشین محلہ روڈ،شاندار چوک،جادہ چوک، سول ہسپتال چوک، محمدی چوک ، قبرستان چوک ، روہتاس روڈ چوک ، بلال ٹاؤن ، کالا گجراںمیں جگہ جگہ تجاوزات کی بھر مار ہو چکی ہے۔

سائیکل ، موٹر سائیکل سوارتودرکنار شہریوں کا پیدل چلنا بھی مشکل ہو گیا ہے اگر کوئی راہگیر تجاوزات پر اعتراض کر ے تو تجاوزات قائم کرنے والا مافیا شریف شہریوں کی بے عزتی کرنے کے ساتھ ساتھ گندی گالیاں دینے سے بھی گریز نہیں کر تے اور بات ہاتھا پائی تک پہنچ جاتی ہے۔

میونسپل کمیٹی کے شعبہ انکروچمنٹ کا متعلقہ عملہ سب اچھا ہے کا راگ آلاپ کر مفت میں تنخواہیں وصول کر رہے ہیں ۔بااثر افراد نے گلیوں میں باتھ روم اور پختہ ائیرکولرز کے سٹینڈ اور باقاعدہ پارکنگ ایریا مختص کر رکھے ہیں گھروں کے آگے سیڑھیوں کو نصف سڑک اور گلیوں تک بڑھا رکھا ہے لیکن انکروچمنٹ کا متعلقہ عملہ اپنا حصہ وصول کر کے لمبی تان کر سوئے ہوئے ہے۔

شہریوں کااس حوالے سے کہنا ہے کہ اگر تجاوزات کوکنٹرول نہ کیا گیا تو عیدالضحیٰ کے موقع نہ صرف ٹریفک بلکہ سیکورٹی کے مسائل بھی پیدا ہوسکتے ہیں، شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب ، چیف سیکرٹری پنجاب، کمشنر راولپنڈی سے شہرکے بازاروں سمیت گلی کوچوں میں قائم ہونے والی تجاوزات کے خاتمے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button