آبی بحران انتہائی سنگین، منگلا ڈیم میں پانی کا ذخیرہ نہ ہونے کے برابر

منگلا: ملک میں آبی بحران انتہائی سنگین ہوگیا، پانی کے بحران نے 22 سالہ ریکارڈ توڑ دیا، آبی ذخائر میں پانی کی کمی 97 فیصد تک پہنچ گئی، صوبوں کو 50 فیصد پانی کی کمی کا سامنا ہے جبکہ ارسا حکام نے پانی کی موجودہ صورتحال کو انہونی قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق آبی بحران مزید سنگین ہوتا جارہا ہے، اس وقت دریاؤں میں 56 فیصد پانی کم آرہا ہے، منگلا ڈیم میں پانی کا ذخیرہ نہ ہونے کے برابر ہے جبکہ تربیلا ڈیم گزشتہ ڈیڑھ ماہ سے خالی ہے، ڈیموں میں پانی کا ذخیرہ ایک لاکھ ایکڑ فٹ ہے اور گزشتہ سال ڈیموں میں پانی کا ذخیرہ 35 لاکھ ایکڑ فٹ تھا۔

دریاؤں میں پانی کا مجموعی بہاؤ 1 لاکھ 25 ہزار کیوسک ہے، صوبہ سندھ اور پنجاب کو 60 ساٹھ ہزار کیوسک پانی فراہم کیا جا رہا ہے، پنجاب کے پانی کی طلب 1 لاکھ 20 ہزار کیوسک، سندھ کے پانی کی طلب 1 لاکھ 30 ہزار کیوسک ہے، دریائے جہلم میں پانی کی کمی کے باعث منگلا ڈیم آدھا بھی نہیں بھر پائے گا اور خدشہ ہے کہ منگلا ڈیم میں ربیع سیزن کے لیے بھی پانی نہیں ہو گا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button