جہلم میں ملاوٹ شدہ مصالحہ جات کی کھلے عام فروخت، انتظامیہ خاموش تماشائی بن گئی

جہلم: شہر اور گردونواح میں ملاوٹ شدہ مصالحہ جات کی کھلے عام فروخت جاری، انتظامیہ خاموش تماشائی بن گئی۔

تفصیلات کے مطابق سرخ مرچ، مصالحہ، ہلدی، گوشت، دودھ ، دہی، دالیں، سوجی، بیسن سمیت دیگر مصالحہ جات کو خطرناک کیمیکل رنگ اور چاول کے بھوسے کی ملاوٹ کر کے بازاروں میں کھلے عام فروخت کیا جا رہا ہے۔

مافیا نے جعلی مصالحہ جات تیار کرنے کیلئے گھروں میں منی فیکٹریاں قائم کر رکھی ہیںِ ان غیرمعیاری مصالحہ جات کو ہوٹلز، میرج ہالز و میرج گارڈن، کینٹینوں سمیت شہر کے بازاروں میں فروخت کیا جا رہا ہے جسے صارفین خرید کر کھانوں میں استعمال کرتے ہیں جس سے شہری بڑی تعداد میں معدے کی خطرناک بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں۔

شہریوں نے ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی سے مطالبہ کیا ہے کہ شہر اور گردونواح میں قائم ناقص و غیرمعیاری مصالحہ جات کی منی فیکٹریوں کے خاتمے کے لئے آپریشن کروایا جائے تا کہ شہریوں کو حفظان صحت کے اصولوں کے مطابق مصالحہ جات کی فراہمی ممکن ہوسکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button