ای او بی آئی کی پنشن کم از کم سرکاری اجرت کے برابر مقرر کی جائے۔ حاجی محمد افضل بلوچ

جہلم: یوم مئی کے موقع پر مزدور تنظیم پنجاب پی ڈبلیو ڈی سی اینڈ ڈبلیو پنجاب کے مرکزی نائب صدر حاجی محمد افضل بلوچ نے کہا ہے کہ آج کا مزدور ان گنت مسائل سے پریشان ہے ، ای او بی آئی کی پنشن کم از کم سرکاری اجرت کے برابر مقرر کی جائے اس وقت رجسٹرڈ مزدور کی ماہانہ پنشن صرف ساڑھے آٹھ ہزار روپے ماہوار مقرر ہے اس پنشن کو 25 ہزار مقرر کیا جائے تاکہ محنت کش طبقہ ریٹائرمنٹ کی مشکلات سے نجات پا سکے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے یوم مئی محنت کشوں کے عالمی دن کے حوالے سے نکالی گئی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی اور صوبائی حکومتیں ہر سال پنشن اور تنخواہوں میں تو اضافہ کرتی ہیں لیکن ایمپلائز اولڈ ایج بینفٹس کے پنشنرز کے ساتھ سوتیلی ماں کا سلوک کیا جاتا ہے ، نو منتخب وزیراعظم میاں شہباز شریف سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اس مسئلے کی جانب بھی خصوصی توجہ دیں۔

مزدور رہنماء حاجی محمد افضل بلوچ نے کہا کہ ورکرز ویلفیئر فنڈ اور ای او بی آئی فنڈز کی نگرانی کی جائے تاکہ محنت کشوں کا یہ پیسہ کہیں بھی ناجائز استعمال نہ ہو سکے ، یوم مئی پر ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ وفاقی اور صوبائی حکومتیں محنت کشوں سے ان کے مسائل بھی سنیں تاکہ معاشرے کے کمزور طبقے کے معاشی مسائل حل ہو سکیں۔

مزدور لیڈر نے کہا کہ جہلم سمیت تمام بڑے شہروں میں لیبر کالونیاں بنائی جائیں تاکہ محنت کشوں کو بھی اس مہنگائی کے دور میں چھت میسرآسکے ورکرز ویلفیئر فنڈز سے ورکرز کے بچوں کو تعلیمی وظائف نہیں مل رہے اسے جاری کیا جائے ، شادی اور ڈیتھ گرانٹ کی ادائیگی بھی دوبارہ بحال کی جائے۔

ریلی میں موجود دیگر مزدور رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ تمام بورڈز کی ورکنگ باڈی میں مزدوروں کے حقیقی نمائندگان کو شامل کیا جائے ، پرائیویٹ سیکٹر میں کم از کم اجرت کی ادائیگی کو یقینی بنانے کے لئے حکومت اقدامات کرے ، آج سے 136 سال قبل شکاگو کے مزدوروں نے جن مقاصد کے لئے جانوں کے نذرانے پیش کئے تھے آج محنت کش انہیں خراج تحسین پیش کرتے ہیں ، نجی اداروں میں مزدور کے حقوق کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے ٹھیکیداری سسٹم کو غیر قانونی قرار دیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ ہنر مند مزدوروں کی رجسٹریشن کرکے ان کومراعات دیں ، ہر مزدور اور اس کے بیوی بچوں کو سوشل سیکورٹی ہسپتال میں علاج کی مفت سہولت فراہم کرنے کا اعلان کیاجائے تاکہ کم آمدنی والا مزدور طبقہ حکومت کی سہولیات سے مستفید ہو سکیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button