جہلم شہر کے گلی محلوں میں قائم بھینسوں کے باڑے شہریوں کی مشکلات میں اضافہ

0 194

جہلم: اندرون شہر کے گلی محلوں میں قائم بھینسوں کے باڑے شہریوں کی مشکلات میں اضافہ، مویشیوں کی باقیات سے بیماریاں پھیلنے کا اندیشہ، میونسپل کمیٹی اور محکمہ ماحولیات کے ذمہ داران خاموش تماشائی، شہریوں نے کمشنر راولپنڈی اور ڈپٹی کمشنر سے مویشیوں کے باڑے بیرون شہر منتقل کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت کی جانب سے رہائشی علاقوں میں بھینسوں کے باڑوں پر پابندی عائد کر رکھی ہے جس کے باوجود میونسپل کمیٹی اور محکمہ ماحولیات کے متعلقہ ذمہ داران کی سرپرستی سے بااثر افراد نے شہر کے رہائشی اور گنجان آباد علاقوں جن میں سلیمان پارس باغ محلہ، بلال ٹاؤن، گلشن فیروز، گلزاری کالونی، آفیسر کالونی، عباس پورہ، جادہ مجاہد آباد، کالا گجراں بلال ٹاؤن، مشین محلہ سمیت دیگر رہائشی علاقوں میں بھینسوں کے باڑے قائم ہیں۔

مویشیوں کے باڑے گندگی پھیلانے سمیت سیوریج لائنوں کی بندش کا سبب بن رہے ہیں ، جبکہ بااثر مالکان مویشیوں کی باقیات اٹھانے کی بجائے گلی محلوں کے خالی پلاٹوں میں پھیلا دیتے ہیں جس سے تعفن اٹھنے کے باعث علاقہ مکینوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

شہریوں نے کمشنر راولپنڈی اور ڈپٹی کمشنر سے اندرون شہر قائم ہونے والے مویشیوں کے باڑوں کو شہر سے دور ویران علاقوں میں منتقل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

اپنی رائے دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.