سردی کی شدت میں اضافہ؛ ڈرائی فروٹ، مچھلی، انڈوں، پکوڑوں کی طلب میں غیر معمولی اضافہ

0 15

جہلم: سردی کی شدت میں اضافے کے باعث ڈرائی فروٹ، مچھلی، انڈوں، پکوڑوں کی طلب میں غیر معمولی اضافہ وکانداروں کی موجیں، دکانداروں نے من مرضی کے نرخ مقرر کر لئے، انتظامیہ خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سردی کی شدت کے اضافے کے ساتھ ہی ڈرائی فروٹ، تلی ہوئی مچھلی ،انڈوں،پکوڑوں اور سموسوں کی مانگ میں غیر معمولی حد تک اضافہ ہو گیا ، لنڈا بازار کی رونقیں بھی دوبالا ہو گئیں۔ موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے ڈرائی فروٹ فروخت کرنے والوں نے بھی اپنے نرخوں میں من مرضی کا اضافہ کر دیا ہے۔

یہاں تک کہ چند روز قبل 140 روپے تا 150 روپے فی پاؤ میں فروخت ہونے والی مونگ پھلی جسے دکاندار بھنے ہوئے بادام کہتے ہیں کے نرخوں میں خود ساختہ اضافہ کر کے 680 روپے فی کلو میں دھڑلے سے فروخت کی جارہی ہے جبکہ کاجو، چلغوزے اور پستہ کے نرخ بھی آسمانوں سے باتیں کر رہے ہیں۔

سموسہ20روپے کی بجائے30 روپے میں، فرائی فارمی مچھلی 1000 روپے تا 1500 روپے فی کلو میں فروخت کی اطلاعات موصول ہو رہی ہیں۔ موسم میں تبدیلی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ہوٹل مالکان نے چائے کی پیالی بھی30 روپے سے بڑھا کر 40 سے 50 روپے میں فروخت کرنی شروع کر دی ہے۔

شہریوں نے پرائس کنٹرول مجسٹریٹس اور ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ زبانی جمع تفریق اور فوٹو سیشن کی بجائے دفتروں سے باہر نکل کر عملی طور پر بازاروں کے روزانہ کی بنیاد پر دورے کئے جائیں اور گراں فروشی کے مرتکب دکانداروں کے خلاف فوجداری مقدمات درج کروائے جائیں تاکہ مہنگائی کی لہر پر قابو پایا جا سکے۔

اپنی رائے دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.