جہلم میں مہنگائی کا طوفان، غریبوں کی چیخیں نکل گئیں

0 17

جہلم: مہنگائی کا طوفان، غریبوں کی چیخیں نکل گئیں، شہری امپورٹڈ حکومت کی کارکردگی سے غیر مطمئن اور حکمران عوام کو ریلیف دینے میں بری طرح ناکام ہے۔

شہر کی سماجی، رفاعی، فلاحی تنظیموں کے عمائدین نے صحافیوں سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومتی مشینری کمزور ہونے کی وجہ سے بااثر تاجروں نے اپنی الگ بادشاہت قائم کر رکھی ہے، صرف چند روز میں آٹے کی قیمتوں میں 50 روپے فی کلو سے زائد کا اضافہ کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس طرح گزشتہ روز چکی کے آٹے کی فی کلو قیمت 1 سو 50 روپے تھی جبکہ سرکاری آٹے کے حصول کے لئے غریب محنت کش سارا دن سڑکوں پر مارے مارے آٹے کی تلاش میں دھکے کھاتے رہے۔ ضلعی انتظامیہ گراں فروشوں کے سامنے گھٹنے ٹیک چکی ہے جس کی وجہ سے بااثر دکانداروں نے من مرضی کے ریٹ مقررکرلئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہر میں اسوقت روٹی کی قیمت 20 روپے اور نان کی قیمت 25 روپے وصول کی جارہی ہے جبکہ انتظامیہ نے روٹی کی قیمت 15 روپے اور نان کی قیمت 20 روپے مقرر کر رکھی ہے، انتظامیہ سب کچھ جاننے کے باوجود خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہی ہے۔

شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب سے مطالبہ کیاہے کہ آٹا، گھی، دالیں سبزیاں مہنگے داموں فروخت کرنے والے دکانداروں کے خلاف فوجداری مقدمات درج کروائے جائیں تاکہ غریب سفید پوش طبقہ اپنے بچوں کو 2 وقت کی روٹی مہیا کر سکے۔

اپنی رائے دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.