کھیوڑہ شہر میں شہری پیسوں سے بھی آٹا لینے کے لیے ذلیل وخوار ہونے لگے

0 24

کھیوڑہ شہر میں شہری پیسوں سے بھی آٹا لینے کے لیے ذلیل وخوار ہونے لگے، پیسے لے کر آٹا دینے والوں نے بھی شہریوں کے ساتھ ناقص رویہ اپنا وطیرہ بنا لیا، پیسے لے کر آٹے کا تھیلا ایسے اٹھا کر پھنکتے ہیں جیسے فری دے رہیں ہوں، انتظامیہ کی عدم دلچسپی کی وجہ سے آٹا لینے والے شہریوں کو شدید سردی میں کئی گھنٹے لائنوں میں لگ کر ذلیل ہونا پڑتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کھیوڑہ شہر میں شدید سردی آٹے لینے والے شہری ذلیل و خوار ہو کر رہ گئے، شہریوں کا کوئی پرسان حال نہیں، کھیوڑہ شہر کی پچاسی فیصد آبادی مزدور طبقے پر مشتمل ہے، آٹا لینے والے شہریوں کے ساتھ آٹا دینے والے ملازموں کا ناقص رویہ دیکھ کر دل خون کے آنسو روتا ہے اور شدید سردی میں کئی کئی گھنٹے ذلیل و خوار ہوتے ہیں۔

باوثوق ذرائع کے مطابق کھیوڑہ شہر میں ساڑھے تین سو تھیلے کی سپلائی آتی ہے مگر اتنے بڑے شہر میں آٹے کی سپلائی اتنی کم ہے۔

عوامی سماجی حلقوں نے ڈی سی جہلم اور اسسٹنٹ کمشنر پنڈدادنخان سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے کہ خدا راہ کھیوڑہ شہر میں آٹے کا کوٹہ بڑھایا جائے اور آٹا دینے والے ملازموں کے ناقص رویہ پر بھی ایکشن لیں تاکہ شہریوں کا عزت و نفس قائم رہے۔ فوری ایکشن لے کر آٹے کا کوٹہ بڑھایا جائے تاکہ عوام ذلیل و خوار نہ ہو اور عزت کے ساتھ آٹا لیں سکیں۔

اپنی رائے دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.